ایمنسٹی انٹرنیشنل کی کشمیر میں‌ مظالم پر مودی حکومت پر کڑی تنقید۔

آمنا سامنا میڈیاعالمی خبریں :

29/06/2020

نامہ نگار : محمد سمیع اللہ شیخ

 میانمارکے سرحدی علاقوں میں فوجی کارروائی، روہنگیا مسلمان گھر چھوڑنے پر مجبور:

 

اسرائیلی انضمام کے منصوبے میں حماس کو بھاری قیمت چکانی پڑسکتی ہے ۔

 

سیاہ فام افراد کے حقوق کے مظاہرین پر فائرنگ،ایک شخص ہلاک۔

 

سیاہ فام افراد کے حقوق کے مظاہرین پر فائرنگ،ایک شخص ہلاک۔

 

کابل بم دھماکے میں انسانی حقوق کی سرگرم خاتون کارکن فاطمہ خلیل ڈرائیور سمیت ہلاک ۔

 

پوری دنیا میں کووڈ19 کے متأثرین کی تعداد ایک کروڑ جبکہ اموات ۵ لاکھ سے تجاوزکرگئی

 

ایمنسٹی انٹرنیشنل کی کشمیر میں‌ مظالم پر مودی حکومت پر کڑی تنقید۔

 

خبریں تفصیل سے

 

 میانمارکے سرحدی علاقوں میں فوجی کارروائی، روہنگیا مسلمان گھر چھوڑنے پر مجبور:

 

 

میانمار کے راخین صوبے میں متوقع فوجی کارروائی کے پیش نظر ایک بار پھر ہزاروں کی تعداد میں مقامی روہنگیا آبادی گھروں سے بھاگ رہی ہے۔ تاہم حکومت نے ہفتے کو اعلان کیا ہے کہ سرحدی علاقوں کے حکام نے انخلا کا حکم نامہ واپس لے لیا ہے۔

راخین ریاست کے ایک مقامی انتظامی سربراہ نے انتباہ کیا تھا کہ فوج درجنوں دیہاتوں کے مقامی لیڈروں کے خلاف کارروائی کرنے والی ہے۔

باغیوں کے خلاف فوجی کارروائی کی خبر سنتے ہی ہزاروں کی تعداد میں مقامی آبادی اپنے علاقے چھوڑ کر کسی محفوظ مقام کی تلاش میں گھر بار چھوڑ کر بھاگ رہی ہے۔

اتوار کو اقوام متحدہ نے ایک بیان جاری کیا جس میں کیانک تھان قصبے میں جاری لڑائی پر تشویش کا اظہار کیا گیا اور فریقین سے اپیل کی کہ وہ انسانی حقوق کے عالمی قوانین کا احترام کریں اور شہریوں کی زندگی بچانے کے سلسلے میں اپنی ذمہ داریاں پوری کریں۔

میانمار میں برطانیہ، آسٹریلیا، امریکہ اور کینیڈا کے سفارت خانوں نے فوج کی جانب سے “کلیرنس آپریشن” کی خبروں پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا کہ اس سے انسانی ہمدردی کے جاری کام متاثر ہوں گے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اسرائیلی انضمام کے منصوبے میں حماس کو بھاری قیمت چکانی پڑسکتی ہے ۔

 

حماس نے انتباہ کیا ہے کہ مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی انضمام کا منصوبہ ایک طرح کا اعلان جنگ ہے۔ تاہم تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ ایک نئی جنگ شروع کر کے حماس کو ایک بھاری قیمت بھی چکانا پڑ سکتی ہے ۔

حالیہ چند ہفتوں کے دوران غزہ کی پٹی پر امریکی صدر ٹرمپ کے مشرق وسطیٰ امن منصوبے کے خلاف احتجاج جاری ہے۔ اس منصوبے کے تحت اسرائیل مغربی کنارے پر تعمیر شدہ اپنی بستیوں کو اسرائیل کی حدود میں شامل کر لے گا اور ساتھ وادی اردن کو بھی شامل کر لے گا۔

یہ فلسطینیوں کا وہ علاقہ ہے جس پر اسرائیل نے 1967 میں قبضہ کر لیا تھا اور یہ غزہ سے صرف 50 کلو میٹر کے فاصلے پر ہے۔

توقع ہے کہ اسرائیل کی حکومت ٹرمپ منصوبے پر عمل درآمد کے بارے میں یکم جولائی کے بعد فیصلہ کرے گی۔ اس وقت کے دوران حماس کو اس منصوبے کے خلاف اپنی حکمت عملی طے کرنا ہے۔

جمعہ کے روز اسرائیل نے جواب میں غزہ میں حماس کے فوجی ٹھکانوں پر فضائی حملے کیے۔ اس سے قبل حماس نے اسرائیلی علاقوں پر راکٹ فائر کے تھے۔

ایک دن قبل حماس کے ترجمان ابو عبیدہ نے کہا تھا کہ انضمام کا فیصلہ ایک طرح سے ہمارے عوام کے خلاف اعلان جنگ ہے۔ اور اس سے علاقے میں جنگ چھڑ سکتی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

سیاہ فام افراد کے حقوق کے مظاہرین پر فائرنگ،ایک شخص ہلاک۔

 

امریکہ کی ریاست کینٹکی کے شہر لوئی ویل میں سیاہ فام خاتون کی پولیس فائرنگ سے ہلاکت کے خلاف احتجاج کرنے والوں کے مظاہرے میں فائرنگ ہوئی ہے۔ پولیس نے فائرنگ سے ایک شخص کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی ہے۔

امریکی خبر رساں ادارے ‘ایسوسی ایٹڈ پریس’ کی رپورٹ کے مطابق لوئی ویل میں مظاہرین سیاہ فام خاتون بریونا ٹیلر کی تین ماہ قبل ان کے گھر کے اندر پولیس کی فائرنگ سے ہلاکت کے خلاف احتجاج کر رہے تھے۔لوئی ویل میٹرو پولیس کا کہنا تھا کہ جیفرسن اسکوائر پارک میں رات کے نو بجے فائرنگ کا واقعہ پیش آیا۔ پولیس نے ایک آدمی کے موقع پر ہلاک ہونے کی تصدیق کی۔ بعد ازاں پولیس کو قریب ہی ایک اور شخص کو زخمی کیے جانے کی بھی اطلاع ملی جس کو اسپتال منتقل کیا گیا۔ حکام نے مذکورہ شخص کی حالت خطرے سے باہر بتائی ہے۔ فائرنگ کے واقعے کے حوالے سے سوشل میڈیا پر ویڈیو بھی وائرل ہوئی ہے جس میں نظر آ رہا ہے کہ ایک شخص فائرنگ کر رہا ہے جب کہ پارک میں موجود مظاہرین چھپنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

کابل بم دھماکے میں انسانی حقوق کی سرگرم خاتون کارکن فاطمہ خلیل ڈرائیور سمیت ہلاک ۔

 

افغان اہل کاروں نے بتایا ہے کہ ہفتے کے روز کابل میں سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں انسانی حقوق کے قومی ادارے سے وابستہ نگراں گروپ کے دو ارکان ہلاک ہو گئے۔

افغانستان کے انسانی حقوق کے آزاد کمشن نے بتایا کہ عطیہ دہندگان کی رابطہ کار 24 سالہ فاطمہ خلیل اور ان کا ڈرائیور صبح کے وقت اپنے دفتر جا رہے تھے، جب دارالحکومت کے مشرقی علاقے میں ان کی کار دیسی ساختہ دھماکہ خیز ڈوائس کی زد میں آئی۔

کمشن نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپنے دو ملازمین کی ہلاکت پر ادارے کو انتہائی صدمہ پہنچا ہے۔ ایک اخباری بیان میں کمشن نے کہا ہے کہ ”دھماکے کے ذمے داروں کو شناخت کیا جائے اور اس قبیح جرم میں ملوث افراد کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے”۔ اس بم دھماکے کی فوری طور پر کسی نے ذمہ داری قبول نہیں کی۔ حالیہ ہفتوں کے دوران کابل میں ہدف بنا کر ہلاکتوں کے واقعات کے سلسلے میں نامور افراد کو نشانہ بنایا گیا ہے، جس کی کسی نے ذمہ داری قبول نہیں کی۔  ان حملوں میں انتہائی معروف علمائے دین، متمدن معاشرے کے نمائندگان اور چار ارکان، جن میں ملک کے اٹارنی جنرل کے دفتر کے دو وکیل بھی شامل ہیں، انہیں گذشتہ ہفتے گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔

پوری دنیا میں کووڈ19 کے متأثرین کی تعداد ایک کروڑ جبکہ اموات ۵ لاکھ سے تجاوزکرگءی

 

رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں کورونا وائرس سے اموات کی تعداد 5 لاکھ ایک ہزار سے تجاوز کر گئی جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد 1 کروڑ 82 ہزار سے زائد ہو گئی ہے۔

کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 54 لاکھ 58 ہزار سے زائد ہوگئی ہے۔ دنیا بھرمیں کورونا سے متاثرہ 57 ہزار 706 افراد کی حالت تشویشناک ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل کی کشمیر میں‌ مظالم پر مودی حکومت پر کڑی تنقید۔

 

کشمیر میں‌ بھارتی مظالم پر ایمنسٹی انٹرنیشنل کی مودی حکومت پر کڑی تنقید ، باغی ٹی وی رپورٹ کے مطابق : ایمنسٹی انٹرنیشنل کے مطابق ضلع اسلام آباد میں بھارتی فورسز نے معصوم بچےکو شہید کیا جو کہ انسانی حقوق کی بدترین خلاف وزری ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل بھارت کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر اوی ناش کمار مودی سرکار پر برس پڑے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت بچےکی ہلاکت کی فوری تحقیقات کرائے، بچےکی ہلاکت کے ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔خیال رہے کہ چند روز قبل مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی فورسز نے مزید 3 کشمیریوں کوہلاک کر دیا۔

ذرأع کے مطابق جموں و کشمیر میں بھارتی افواج کی دہشت گردی جاری ہے اور آج بھی ضلع پلوامہ میں بھارتی فورسز نے مزید 3 کشمیریوں کو ہلاک کر دیا۔
خیال رہے کہ بھارتی فورسز نے ضلع اسلام آباد میں سرچ آپریشن کے بہانے کارروائی کرکے بچے کو مارڈالاتھا۔ ایمنسٹی انٹرنشینل نے بچے کی ہلاکت کو انسانی حقوق کی بدترین خلاف وزری قرار دیا ہے۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل بھارت کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ایوناش کمار نے مودی سرکار کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے واقعہ کو جنیوا کنونش کی بدترین خلاف وزری قرار دیا ہے۔ انہوں نے بچے کی ہلاکت کی فوری تحقیقات اور ذمہ داروں کو پکڑ کر سخت کارروائی کا مطالبہ بھی کیا۔