این پی آر کے بائیکاٹ کیلئے ویلفیئر پارٹی کی اسٹیکر مہم

ممبئی : حکومت کے منصوبوں کے مطابق یکم اپریل سے این پی آر شروع ہوجائے گا ۔تین ماہ سے جاری اس کے خلاف تحریک اور عوامی ناراضگی کے باوجود حکومت ٹس سے مس ہونے کو راضی نہیں اور وہ این پی آر کیلئے کمر بستہ ہے ۔ واضح ہو کہ مردم شماری کی جگہ پر این پی آر کا منصوبہ واجپائی حکومت کی اپج ہے ۔ عوامی مطالبہ ہے کہ این پی آر کے فارم میں جو ناقابل قبول نکات ہیں جن پر شہریوں کو اعتراض ہے اسے حذف کیا جائے ۔ جہاں ملک میں کچھ سیاسی پارٹیوں کے علاوہ تقریبا سبھی سماجی تنظیمیں اور حقوق انسانی کے کارکنان این پی آر کیخلاف میدان میں ہیں وہیں ویلفیئر پارٹی آف انڈیا بھی اس کیخلاف ’بائیکاٹ این پی آر‘ اسٹیکر کے ذریعہ مہم چھیڑے ہوئی ہے ۔ اس سلسلے میں ویلفیئر پارٹی مہارشٹر کے صدر شیخ سلیم اور ممبئی صدر ڈاکٹر سراج عثمانی نے بتایا ’ان کی پارٹی ہرگھر تک یہ پیغام پہنچارہی ہے کہ مردم شماری کا استقبال کریں اور این پی آر کا بائیکاٹ کریں‘۔ شیخ سلیم کے مطابق اس مہم کیلئے یو ٹیوب پر بائیکاٹ کی اپیل والا ویڈیو بھی اپلوڈ کیا گیاہے نیز ایک اسٹیکر بنوایا ہے جس کا اجرا گذشتہ ہفتے ہو چکا ۔اسٹیکر گھر کے داخلی دروازوں پر چپکایا جارہا ہے ۔مذکورہ مہم مہاراشٹر کے متعدد اضلاع میں جاری ہے جن میں ناگپور، آکورڈی، پمپری چنچوڑ ،پونے ، کلیان اور ممبئی قابل ذکر  ہیں ۔مہم کے تحت ویلفیئر پارٹی کے ارکان، کارکنان و عہدیدار گھروں پر جا کر ذاتی طور سے لوگوں کو این پی آر کے نقصانات سے آگاہ کررہے ہیں اور اس کے بعد ان کے گھر کے داخلی دروازوں پر مہم کی اسٹیکر چسپاں کررہے ہیں ۔

کیپشن تصویر : ویلفیئر پارٹی آف انڈیا کے تھانے ضلع صدر دادا کا مبلے کلیان میں سٹکر لگاتے ہوئے