جیوترادتیہ سندھیا سندھیا پارٹی مخالف سرگریوں میں ملوث ہونے کے سبب کانگریس سے برطرف

ئی دہلی: کانگریس نے سابق مرکزی وزیر جیوترادتیہ سندھیا کو پارٹی سے برطرف کر دیا ہے۔ کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے منگل کے روز سندھیا کو ان کی پارٹی مخالف سرگرمیوں کے سبب فوری طور پر پارٹی سے برطرف کئے جانے کو منظوری دی۔ پارٹی کےجنرل سکریٹری کے سی وینو گوپال نے بیان جاری کر کے اس کی اطلاع دی۔
اس سے قبل سندھیا نے پارٹی کی ابتدائی رکنت سے استعفی دیتے ہوئے سونیا گاندھی یو خط لکھا تھا۔ سندھیا نے منگل کی صبح پہلے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ سے ملاقات کی اور اس کے بعد دونوں وزیر اعظم نریندر مودی سے ملنے ان کی رہائش گاہ گئے۔ تقریباً ایک گھنٹے تک جاری رہی ملاقات کے بعد سندھیا اور امت شاہ ایک ساتھ باہر نکلے۔ اس کے کچھ دیر بعد سندھیا نے ٹوئٹر پر اپنے استعفے کا اعلان کر دیا۔
سندھیا نے سونیا گاندھی کو بھیجے گئے خط میں لکھا ’’ممیں گزشتہ 18 برسوں سے پارٹی کے ابتدائی رکن تھا اور اب وقت آ گیا ہے کہ میں پارٹی سے الگ اپنی راہ لوں۔ میں پارٹی کی ابتدائی رکنیت سے اور انڈین نیشنل کانگریس سے استعفی دے رہا ہوں‘‘۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان کا مقصد اور ہدف ملک اور اپنی ریاست کے لوگوں کی خدمت کرنا ہے۔ انہیں محسوس ہو رہا ہے کہ وہ کانگریس کے اندر وہ یہ کام آگے نہیں بڑھا پائیں گے۔