یہ حکومت ۸۰؍ فیصد ہندوستانیوں سے نفرت کرتی ہے : عبد الرحمن سابق آئی پی ایس

یہ حکومت ۸۰؍ فیصد ہندوستانیوں سے نفرت کرتی ہے : عبد الرحمن سابق آئی پی ایس
پونے : پونے کے کونڈوا میں ایک ہفتہ سے زائد سے شاہین باغ کی طرز پر خواتین کا احتجاج جاری ہے ۔ اس دوران یہاں کئی معروف سماجی اور فلمی ہستیاں آچکی ہیں اور انہوں نے کونڈوا کی خواتین کے ساتھ اپنی یکجہتی کا اظہار کیا ہے ۔ اسی سلسلے میں سابق آئی پی ایس افسر عبد الرحمن بھی یہاں آئے اور انہوں نے اظہار یکجہتی کے ساتھ ہی مجمع عام میں کہا ’یہ سرکار 80 فی صد ہندوستانیوں سے نفرت کرتی ہے‘ ۔ واضح ہو کہ عبد الرحمن وہ آئی پی ایس افسر ہیں جنہوں نے پارلیمنٹ میں سی اے اے قانون پاس ہونے کے بعد بطور احتجاج استعفیٰ دے دیا تھا ۔ انہوں نے مزید یہ بھی کہا ’سرکار اقتدار کے نشے میں دھت ہے‘ ۔عبد الرحمن نے کہا جمہوری طرز پر احتجاج ہمارا قانونی و دستوری حق ہے ہم سے یہ حق کوئی نہیں چھین سکتا ۔ جس دن جنید کو شہید کیا گیا تھا یا جس دادری میں اخلاق اور راجستھان میں پہلو خان کو شہید کیا گیا ہم سڑکوں پر اترتے تو یہ حالات پیدا نہیں ہوتے ۔ خیر جو ہوا سو ہوا اب این آر سی کا مسئلہ صرف مسلمانوں کا مسئلہ نہیں ہے ، کون باوقار شہری یہ چاہے گا کہ وہ اس ملک میں مہاجر بن کر رہے ۔ انہوں نے کہا یہ لڑائی لمبی ہے اور ہمیں قربانی کے لیے تیار رہنا چاہئے ۔